02/08/2020

Eid e Qurban ka asal maqsad:


اقوام عالم کی تاریخ کا مطالعہ کرنے سے پتا چلتا ہے کہ 
قربانی کا تصور ہر مذہب میں کسی نہ کسی شکل میں موجود ہے لیکن اس کا حقیقی مقصد و فلسفہ حضرت ابراہیم (ع) نے دنیا کے سامنے پیش کیا۔ حضرت ابراہیم (ع) نے جب خواب میں دیکھا کہ وہ اپنے بیٹے حضرت اسماعیل (ع) کو ذبح کر رہے ہیں تو انھوں نے اسے مشیت ایزدی سمجھا اور بیٹے کو خدا کی راہ میں قربان کرنے کے لیے تیار ہوگئے اور ان کے بیٹے حضرت اسماعیل (ع) نے بھی اسے اللہ کی رضا اور حکم سمجھ کر خود کو صابرین کی قطار میں کھڑا کر دیا۔ اللہ نے ایک دنبہ وہاں بھیج کر دونوں باپ بیٹے کو ان کے امتحان میں کامیابی کی خوشخبری سنائی اور یہ عمل شریعت میں اس قدر مقبول ہوا کہ ہر سال سنت ابراہیمی کے نام سے منایا جانے لگا۔ 
یہاں قابل غور بات یہ ہے کہ قربانی کا مقصد صرف جانور ذبح کرنا نہیں ہے بلکہ اس کا اصل مقصد اللہ کی واحدانیت و بزرگی کا اقرار ہے، اس کی عطا کردہ نعمتوں کا شکر بجا لانا اور ان میں سے کچھ حصہ غریب و نادار لوگوں میں تقسیم کرنا ہے ۔ 
اس کا ایک مقصد اپنے نفس اور اپنی غلط خواہشات پر چھری چلانا ہے۔ ہر وہ چیز مال و دولت، غرور، انا جو آپ کو ایمان کے راستے میں کمزور کر دے اور جس کی محبت خدا کی محبت سے بیگانہ کر دے اسے بھی قربانی کے لیے منتخب کر لینا چاہیے کیونکہ اپنے نفس اور انا کو قربان کر کے ہی ہم قربانی کے اصل فلسفہ تک پہنچ سکتے ہیں۔



Eid e Qurban ka asal maqsad-Eid ul adha



The study of the history of nations reveals that the concept of sacrifice exists in every religion in one form or another but its true purpose and philosophy was presented to the world by Hazrat Ibrahim (AS). When Hazrat Ibrahim (AS) saw in his dream that he was slaughtering his son Hazrat Ishmael (AS), he considered it as the will of Almighty Allah and was ready to sacrifice his son in the way of God and his son Hazrat Ismail (AS) also considered it as command of Allah and did not hesitate. Allah sent a sheep there and gave the good news of success to both the father and the son and this practice became so popular in the Shari'ah that it was celebrated every year in the name of "Sunnat-e-Ibrahim".
It is worth noticable here that the purpose of the sacrifice is not only to slaughter the animal but also to acknowledge the oneness and greatness of Allah, to give thanks for his blessings and also help poor and needy people.
One of its purposes is to refrain ourselves from wrong desires. Wealth, pride, ego, whatever weakens you in the path of faith and stops you from the love of God, should also be chosen for sacrifice, because only by sacrificing our ego, we can get to the real philosophy of sacrifice.

(Written by Farogh e Aza Team)

(تحریر ٹیم فروغ عزا )